جمعہ , 6 دسمبر 2019

تحصیل اٹھارہ ہزاری کی یونین کو نسل روڈوسلطان میں بچوں کو ویکسی نیشن نہ ہوسکی

جھنگ۔تحصیل اٹھارہ ہزاری کی یونین کو نسل روڈوسلطان میں بچوں کو ویکسی نیشن نہ ہوسکی،بچوں میں مختلف بیماریاں پھیلنے لگیں، ویکسنٹر گھر بیٹھے تنخواہیں وصول کرنے لگا،تفصیلات کے مطابق یونین کونسل روڈوسلطان جوکہ تحصیل اٹھارہ ہزاری کی آبادی کے لحاظ سے بڑی یونین کونسل ہے، رورل ہیلتھ سنٹر کی صورت میں ایک ہسپتال تو موجود ہے لیکن صحت کی بنیادی سہولیات میں سب سے محروم یونین بھی روڈوسلطان ہے، روڈوسطان کی بیشتر آبادی میں پانچ سال سے کم عمر بچے ویکسی نیشن سے محروم ہیں رورل ہیلتھ سنٹر میں ایک ویکسنٹر موجود ہے لیکن روڈوسلطان کی آدھے سے زیادہ آبادی میں ویکسی نیشن نہیں ہوئی جس کی وجہ بچوں میں مختلف موذی امراض جنم لے رہی ہیں ویکسینز جوکہ خود اور اس کے رشتہ دار ایک بااثر سیاسی شخصیت کے زیادہ قریب سمجھے جاتے ہیں کی وجہ سے زیادہ تر گھر بیٹھے ہی تنخواہیں وصول کر رہا ہے موصوف کبھی کبھی فیلڈ ڈیوٹی پر نظر آتے ہیں یا صرف میٹنگز میں شریک ہوتے ہیں، جب اس بارے ویکسینز سے رابطہ کیا گیا اس کا کہنا تھا کہ لوگ ویکسی نیشن کروانے سے انکاری ہوتے ہیں، ویکسی نیشن نہ ہونے پر عوامی و سماجی حلقوں نے سی ای او ہیلتھ، ڈی سی جھنگ، اے سی اٹھارہ ہزاری سے فوری اصلاح و احوال کا مطالبہ کیا ہے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے