اپوزیشن لیڈر اور بنگلہ دیش نیشنلسٹ پارٹی کی سربراہ خالدہ ضیا کی 4 ماہ کی عبوری ضمانت منظور کرلی گئی جس کے بعد انہیں رہا کردیا گیا۔

ڈھاکہ: بنگلہ دیش کی گرفتار شدہ سابق وزیر اعظم خالدہ ضیا کو 4 ماہ کی عبوری ضمانت پر رہا کردیا گیا۔ انہیں سنائی گئی تھی۔

تفصیلات کے مطابق بنگلہ دیش کی اپوزیشن لیڈر اور بنگلہ دیش نیشنلسٹ پارٹی کی سربراہ خالدہ ضیا کی 4 ماہ کی عبوری ضمانت منظور کرلی گئی جس کے بعد انہیں رہا کردیا گیا۔

خالدہ ضیا کو گزشتہ ماہ کرپشن کے الزام میں 5 سال قید کی سزا سنائی گئی تھی۔ 2 بار وزیر اعظم رہنے والی خالدہ ضیا پر یتیم خانے کے فنڈ میں خرد برد کا الزام عائد کیا گیا۔

خالدہ ضیا کے خلاف فیصلہ آنے سے قبل 35 سو اپوزیشن کارکنان سماجی رہنماؤں کو بھی گرفتار کیا گیا۔

سابق وزیر اعظم نے اپنی سزا کے خلاف اپیل دائر کر رکھی تھی تاہم ان کے وکیل کا کہنا ہے کہ ان کی ضمانت کا فیصلہ کرنے میں بہت تاخیر کی گئی۔

خالدہ ضیا اپنے اوپر عائد الزامات کی سختی سے تردید کرتے ہوئے انہیں سیاسی بنیادوں پر قائم کردہ الزامات قرار دیتی ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ انہیں اور ان کے خاندان کو سیاست سے علیحدہ کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے