اتوار , 18 نومبر 2018

بچوں پر چیخنا ان پر بدترین اثرات مرتب کرنے کا باعث

والدین بننا ایک بہت بڑی ذمہ داری ہے جو آپ پر اپنے بچے کی تربیت کی بہت بھاری ذمہ داری عائد کرتی ہے۔

تمام والدین چاہتے ہیں کہ ان کا بچہ ملک و معاشرے کے لیے کارآمد فرد ثابت ہو اور ایک اچھی زندگی گزارے، لیکن اس کا حصول اسی وقت ممکن ہے جب بچہ ذہنی وجسمانی طور پر صحت مند ہو۔

بعض والدین بچوں کے کھانے پینے کا خیال رکھتے ہوئے صرف ان کی جسمانی صحت پر دھیان دیتے ہیں لیکن ایسے موقع پر وہ ذہنی صحت کو بھول جاتے ہیں۔

جی ہاں، کم عمر اور کمسن بچے کی ذہنی صحت بھی بہت اہمیت رکھتی ہے اور یہی آگے چل کر اس کی زندگی کا رخ متعین کرتی ہے۔

کیا آپ جانتے ہیں کہ بچوں پر آپ کا چیخنا انہیں ذہنی طور پر شدید متاثر کرنے کا سبب بن سکتا ہے؟

جب بچوں سے چیخ کر بات کی جائے، یا چلا کر انہیں ڈانٹا جائے تو ان کا ننھا ذہن انہیں سیلف پروٹیکشن یعنی اپنی حفاظت کرنے کا سگنل دیتا ہے۔

اسی طرح ایسے موقع پر بچے کو دماغ کی جانب سے یہ سگنل بھی ملتا ہے کہ وہ شدید ردعمل کا اظہار کرے۔

یہ دونوں چیزیں ایک نشونما پاتے دماغ کے لیے نہایت مضر ہیں جس سے دماغ متاثر ہوتا ہے اور اس کے اثرات آگے چل کر واضح ہوتے ہیں۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ ایسے لوگ جن کا بچپن اس طرح گزرا ہو کہ انہوں نے چیختے چلاتے افراد کا سامنا کیا ہو، ایسے افراد اپنی زندگی میں شدید قسم کے نفسیاتی مسائل اور ذہنی پیچیدگیوں کا شکار ہوجاتے ہیں۔

اس کے برعکس ایسے والدین جو اپنے بچوں کے ساتھ نرم مزاجی سے پیش آئیں اور پرسکون ہو کر ان کے مسائل کو حل کریں، ان والدین کے بچے خود بھی ذمہ دار اور ٹھنڈے مزاج کے حامل ہوتے ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے