ویمنزپلیئرز کا تحفظ؛ ہراساں کیے جانے کیخلاف قانون سازی

اسلام آباد:  وزارت بین الصوبائی رابطہ نے خواتین کھلاڑیوں کو جنسی طور پر ہراساں کیے جانے والے واقعات کی روک تھام کیلیے آئین سازی کا فیصلہ کیا ہے۔

ذرائع سے معلوم ہواہے کہ وزارت کے ذیلی ادارے پاکستان اسپورٹس بورڈ کے ساتھ الحاق شدہ قومی اسپورٹس فیڈریشنزکوخصوصی طور پر ہدایات جاری کی گئی ہیں۔

ملکی خواتین کھلاڑیوں کو مکمل تحفظ فراہم کرنے کیلیے پی ایس بی میں ویمن لیگل سینٹر قائم کیا جا رہا ہے.

جہاں خواتین کھلاڑی اپنی شکایات جمع کرائیں گی اور ان شکایات کی بنیاد پر لیگل سینٹر پی ایس بی کی لیگل برانچ کے وکلا اس واقع یا شکایت کا بغور جائزہ لینے کے بعد متعقلہ عدالت میں ملزم یا جرم کرنے والے فردکے خلاف قانونی کارروائی کی جائیگی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے