ڈاکٹر محسن عباس ڈپٹی ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر لالیاں ”فرعون“ بن گیا۔

*ساڑھے چار سال سے سیاسی پشت پناہی کی بدولت تحصیل لالیاں میں تعینات موصوف دن رات قانون کی دھجیاں اڑانے میں مصروفِ عمل۔۔
* کلرک منتظر احمد موصوف کے ظالمانہ رویے کی وجہ سے ڈپریشن  کا مریض بن چکا ہے،،میڈیکل ریسٹ ملنے کے باوجود منتظر احمد کو موصوف نے ذاتی عناد و انا پرستی کی بھینٹ چڑھا کر غیر حاضر کیا

اور ماہِ ستمبر کی تنخواہ بند کروا دی۔۔
* کرپٹ AEO محمد ایاز لالی کی دلالی کے ذریعے تحصیل میں اساتذہ پر ظلم اور رشوت ستانی کا بازار گرم کر رکھا ہے،،، ڈپٹی ڈی ای او ڈاکٹر محسن اور ایاز AEO کا پیٹ نہ بھرنے والے اساتذہ کی تنخواہوں کی بندش اور بلا جواز سخت سزاٶں کا سلسلہ جاری ہے۔۔
*ماتحت سرکاری ملازمین پر بد کلامی، تذلیل، گالم گلوچ اور نازیبا زبان کا استعمال موصوف کا عام معمول ہے۔۔
*ماتحت سرکاری ملازمین سے ذاتی ملازمین سے بھی بدتر سلوک روا رکھا جاتا ہے

اور ان سے زبردستی ذاتی کام لیے جاتے ہیں۔۔سکول میں رانا ابرار سے ذاتی گاڑی کی سروس اور گھر میں محسن اور قیصر سے پورے گھر کی صفاٸی کرواٸی جاتی ہے۔۔*

دو سال 2015 اور 2016 میں اقبال سلیمی AEO (ہیڈ کوارٹر) کو ڈرا دھمکا کر ڈاکٹر محسن نے اپنے بچے کو گھر پر بغیر ٹیوشن فیس پڑھانے پر مجبور کیے رکھا اور یہی کام اب محمد بلال سکول نمبر 1 لالیاں سے لیا جا رہا ہے۔۔

*گاڑی خراب ہونے پر بے چارے ڈراٸیور شاہد کی تنخواہ بند کروا دی اور اس سے جرمانے کے نام پر 15000 روپے ہتھیا کر جیب گرم کر لی۔۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے