ہفتہ , 21 ستمبر 2019

سابق وزیر اؑظم یوسف رضا گیلانی کی بیٹی کو گرفتار کرنے کا حکم

شوہر کی درخواست پر سابق وزیر اعظم کی بیٹی کو گرفتار کرنےکا حکم ، وارنٹ گرفتاری جاری کر دیے گئے۔۔۔ سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی کی بیٹی کے وارنٹ گرفتاری جاری کر دئے گئے۔ تفصیلات کے مطابق فیملی کورٹ نے سابق وزیرا عظم یوسف رضا گیلانی کی بیٹی فضہ بتول کے ورانٹ گرفتاری جاری کر دیئے۔ فیملی عدالت کے جج اختر حسین نے خرم خان کی درخواست پر ورانٹ گرفتاری جاری کیے، عدالت نے سابق شوہر کی بیٹے سے ملاقات نہ کروانے پر وانٹ گرفتاری جاری کیے۔
عدالت نے آئندہ سماعت پر سابق شوہر کی بیٹے کی ملاقات کا حکم بھی دیا۔ خرم خان نے موقف اختیار کیا کہ سابق بیوی عدالتی حکم کے باوجود بیٹے سے ملاقات نہیں کروا رہی، عدالت سے استدعا ہے کہ سابق بیوی کو بیٹے سے ملاقات کا پابند کرنے کا حکم دیا جائے۔ یاد رہے خرم خان اور فضہ بتول کے درمیان علیحدگی 2009ء میں ہوئی تھی۔ قبل ازیں ایک مرتبہ عدالت سابق وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی کی صاحبزادی فضہ بتول کو گرفتار کرنے کا حکم بھی جاری کر چکی ہے۔ فضہ بتول کو گرفتار کرنے کا حکم گارڈین جج نے جاری کیا تھا۔عدالتی احکامات نہ ماننے پر فضہ بتول کو گرفتار کرنے کا حکم جاری کیا گیا تھا۔ فضہ بتول کے خلاف ان کے سابق شوہر خرم نے اپنے بیٹے اسفند یار کی حوالگی سے متعلق درخواست دائر کر رکھی تھی۔ فضہ بتول کی 2009ء میں اپنے شوہر خرم سے علیحدگی ہو گئی تھی جس کے بعد ان کے شوہر نے اپنے بیٹے کی حوالگی کے لیے کیس دائر کیا۔ عدالت نے فضہ کو حکم دیا تھا کہ وہ اسفند کی اپنے والد سے ملاقات کروائیں لیکن خرم نے عدالت کو بتایا کہ فضہ نے ان کے بیٹے کی ان سے ملاقات نہیں کروائی۔ جس پر تین سال قبل بھی عدالت نے فضہ بتول کو عدالت میں پیش ہونے کا حکم دیا لیکن وہ عدالت میں پیش نہیں ہوئی تھیں۔جس کے بعد عدالت نے حکم دیا تھا کہ پولیس فضہ بتول کو بچے سمیت آئندہ پیشی پر عدالت لائے۔ تاہم اب ایک مرتبہ پھر سے فضہ بتول کے وارنٹ گرفتاری جاری کر دئے گئے ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے