ہفتہ , 21 ستمبر 2019

اگلے 72گھنٹوں میں مریم نواز کیساتھ کیا ہونے والاہے کہ شریف خاندان آنسو بہائے گا

اگلے 72گھنٹوں میں مریم نواز کیساتھ کیا ہونے والاہے کہ شریف خاندان آنسو بہائے گا ، مریم نواز کو رونے کے لیے کیپٹن (ر) صفدر کا کاندھا بھی میسر نہیں ہو گا، بڑا انکشاف ۔۔۔رہنما پاکستان تحریکِ انصاف عامر لیاقت نے دعویٰ کیا ہے کہ اگلے 72گھنٹوں میں مریم نواز پر ایسا وقت آنے والا ہے کہ شریف خاندان آنسو بہائے گا ۔ ڈاکٹر عامر لیاقت نے اپنے ٹویٹر پیغام میں کہا ہے کہ ”
اگلے کچھ دنوں میں یا شاید پھر 72 گھنٹوں کے دوران "مریم ہزار داستان” میں ایسا موڑ آنے والا ہے کہ گاڈ فادر خاندان اپنی کذب و ریاکاری پر آٹھ آٹھ آنسو بہائے گا اور رونے کے لیے صفدر اعوان کا کاندھا بھی دستیاب نہیں ہوگا ان شا اللہ“۔ ڈاکٹر عامر لیاقت حسین نے پیشن گوئی کی ہے کہ اگلے چند دنوں یا 72گھنٹوں میں شریف خاندان پر برا وقت آنے والا ہے۔ اگلے کچھ دنوں میں یا شاید پھر 72 گھنٹوں کے دوران "مریم ہزار داستان” میں ایسا موڑ آنے والا ہے کہ گاڈ فادر خاندان اپنی کذب و ریاکاری پر آٹھ آٹھ آنسو بہاتے گا اور رونے کے لیے صفدر اعوان کا کاندھا بھی دستیاب نہیں ہوگا ان شا اللہ ۔۔واضح رہے کہ اٹارنی جنرل آف پاکستان انور منصور خان نے جج ارشد ملک کی ویڈیو کے معاملے پر بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ کسی کی اجازت لیے بغیر اس کی ویڈیو بنانا پر 3سال قید سزا ہو سکتی ہے ۔ انہوں نے کہا ہے کہ سائبر قوانین کے تحت ویڈیو میں ملوث ہر شخص پر کیس چل سکتا ہے اور انہیں سزا مل سکتی ہے۔ انور منصور خان نے بتایا ہے کہ ویڈیو کا حکومت سے کوئی تعلق نہیں لیکن وکیل کیا جا سکتا ہے اور یہ کیس خود بخود ٹرائل پر چلا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ویڈیو کو عدالت میں ثابت کرنے کے لیے ویڈیو بنانے والے کا عدالت مین پیش ہونا ضروری ہے اور اصل کیمرہ اور کیمرے کا سٹینڈ بھی ثبوت کے طور پر پیش کرنا ضروری ہے، جس نے ویڈیو بنائی اور کسی کو بھیجی اسے بھی سامنے آنا پڑے گا۔ اٹارنی جنرل آف پاکستان نے مزید کہا ہے کہ ویڈیو جس کے سامنے بنی ہو اس کا بھی سامنے آنا ضروری ہے، جب ویڈیو ایڈٹ ہوتی ہے تو اس میں ڈیجیٹل امرنٹس موجود ہوتے ہیں اور بغیر اجازت کسی کی ویڈیو بنانا جرم ہے اور یہ جرم کرنے والے کو 3سال قید اور 10لاکھ جرمانہ بھی ہو سکتا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے