جمعہ , 6 دسمبر 2019

کشمیر پر کمزوری کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا، شاہ محمود قریشی

اسلام آباد: وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ کشمیر پر کمزوری کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا۔

قومی اسمبلی میں اظہارِخیال کرتے ہوئے وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ کشمیر کے معاملے پر کوئی ابہام نہیں اور اس پر کمزوری کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا، یہ مسئلہ آج کا نہیں 72 سالہ مسئلہ ہے، حکومت وقت نے اپوزیشن کی مشاورت سے اس مسئلے کو جتنا اجاگر کیا ہے اس کی ماضی میں مثال نہیں، دنیا بھی حکومتی کوششوں کے معترف ہیں۔

وزیرخارجہ کا کہنا تھا کہ ہم نے کشمیر کے معاملے کو بین الاقوامی کیا اور 70 ممالک کے حکمرانوں سے رابطے کئے، آج دنیا کے ایوانوں میں بحثیں ہورہی ہیں، وزیراعظم عمران خان نے جنرل اسمبلی میں اس مسئلے پر کھل کربات کی، کشمیر پر جاری صورتحال سے پارلیمنٹ کو آگاہ رکھنے کی ہر ممکن کوشش کی گئی، ایوان کی قائمہ کمیٹیوں، پارلیمانی کشمیر کمیٹی کو بھی آگاہ رکھا جارہا ہے، اپوزیشن کو دعوت عام ہے کہ آئیے کشمیر پر اپنی آراء دیجئے ہم ان آراء کو سنیں گے بھی اور ان پر عمل بھی کریں گے، اپوزیشن ہماری کاوشوں کو کم کرنے کی کوشش نہ کرے۔
شاہ محمود قریشی نے کہا کہ آج کوئی کشمیری رہنما ہندوستانی مؤقف کی حمایت نہیں کررہا، ہندوستان نواز کشمیری رہنماوں نے بھی ہندوستانی موقف کو مسترد کیا، آج خود ہندوستانی اپوزیشن بھی حکومتی اقدامات کے سخت خلاف ہیں، کشمیر کا مسئلہ خود ہندوستانی حکمرانوں کے اقدامات کی وجہ سے بھی اجاگر ہوا، 50 برس بعد کشمیر کے مسئلے پر سلامتی کونسل کا اجلاس بلایا گیا، ہندوستان نے اس اجلاس کو روکنے کیلئے ہر ممکن کوشش کی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے