منگل , 25 فروری 2020

خاتون نے آشنا سے مل کر شوہر کو زہر دیدیا ، بے رحم خاتون ویڈیو بھی بناتی رہی ، مرتے مرتے باپ نے بچوں کیلئے کیا پیغام دیدیا ؟ ویڈیو لنک میں

خاتون نے آشنا سے مل کر شوہر کو زہر دیدیا ، بے رحم خاتون ویڈیو بھی بناتی رہی ، مرتے مرتے باپ نے بچوں کیلئے کیا پیغام دیدیا ؟ ۔۔۔لبنان میں ایک خاتون نے سفاکی کی انتہا کر دی۔ آشنا کی محبت میں گرفتار خاتون کی انسانیت کی تذلیل پر مبنی حرکت کی ویڈیو بھی وائرل ہو گئی۔ لبنان میں مقیم ایک خاتو ن نے اپنے شوہر سے چھٹکارا حاصل کرنے کی خاطر اُسے کھانے میں زہر دے دِیا اور پھر زہر کے باعث تڑپتے مرتے خاوند کی تضحیک آمیز ویڈیو بھی بنا ڈالی۔ جس کے سامنے آنے پر سوشل میڈیا پر عوام شدید مشتعل ہو گئے
اور اپنے خاوند کے ساتھ دغا کرنے والی 29 سالہ قاتل بیوی اور اس کے آشنا کو سخت سزا دینے کا مطالبہ بھی کر ڈالا۔ اس ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ خاتون کا 34 سالہ خاوندعبدالرحمان العقاری زہر خورانی کے باعث انتہائی اذیت کی حالت میں دکھائی دے رہا ہے، بے رحم خاتون اس دوران اُس کی ویڈیو بھی بنا رہی ہے۔ شامی خاوند مرنے سے کچھ دیر قبل اپنے دونوں بچوں کو قریب بُلا کر اُن سے کہتا ہے کہ وہ مرنے جا رہا ہے اور اُن کے مستقبل کے بارے میں بہت فکر مند ہے۔ وہ بچوں کو نصیحت کرتا ہے کہ اب اُنہیں اپنی زندگی کا خود ہی خیال رکھنا ہو گا۔ کیونکہ اُن کی ماں اپنے آشنا کو راضی کرنے کی خاطر اُنہیں بھی مار ڈالے گی۔ بے حِس بیوی اپنے مرتے ہوئے خاوند کو بچانے کی بجائے تضحیک آمیز انداز میں اُس کی ویڈیو بناتی رہی۔ اس ویڈیو کے سامنے آنے کی بعد لبنانی عوام تڑپ اُٹھے اور اپنے خاوند کو کھانے میں زہر ملا کر دینے والی سفاک خاتون کو عبرت ناک سزا دینے کا مطالبہ کر ڈالا۔ سوشل میڈیا پر ویڈیو وائرل ہونے کے بعد پولیس بھی حرکت میں آئی اور خاوند کو زہر دینے والی نوجوان خاتون احمد کسیر دست کو گرفتار کر لیا۔ جبکہ اُس کا آشنا جو سزا سے بچنے کی خاطر لیبیا فرار ہو چکا تھا، اُسے بھی ٹریپولی کے علاقے سے گرفتار کر لیا گیا۔ جس کے قبضے سے نشہ آور ادویات بھی برآمد ہوئیں۔خاتون کے آشنا کا تعلق فلسطین سے ہے۔ دونوں گرفتار کیے گئے خاتون اور مرد سے تفتیش کے دوران پتا چلا کہ اس شرمناک فعل کی منصوبہ بندی خاتون کے آشنا نے ہی رچی تھی۔ تاہم خاتون کو اپنے خاوند کی توہین و تضحیک پر مبنی ویڈیو بنانے کی حماقت نے مروا ڈالا۔ دونوں ملزمان کے خلاف مقدمہ چلایا جا رہا ہے، امکان ہے کہ انہیں ان کے شرمناک فعل پر سزائے موت دی جائے گی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے