جمعرات , 2 جولائی 2020

عید کے دن گندی خواہش پوری نہ کرنے پرپولیس کانسٹیبل نےنوجوان حافظ قرآن کو اس کے باپ کے سامنےگولی ماردی

بچوں کے ساتھ زیادتی کے واقعات کے حوالے سے بدنام قصور میں گندی خواہش پوری نہ ہونے پر  پولیس کانسٹیبل نے حافظ قرآن نوجوان کو اس کے والد کے سامنے گولی مار کر قتل کردیا۔ایف آئی آر کے مطابق کھڈیاں خاص میں قاری خلیل الرحمان اپنے لڑکوں سمیع الرحمان اور صفیع الرحمان کے ہمراہ فجر کی نماز کیلئے مسجد جارہا تھا۔ راستے میں گلی کے کونے پر پولیس کانسٹیبل معصوم علی بھی آگیا اور اس نے سمیع اللہ سے غلط خواہش کا اظہار کیا۔ کانسٹیبل نے حافظ قرآن نوجوان کو دھمکی دی کہ اگر عید کے دن بھی اس کی خواہش پوری نہ ہوئی تو وہ اسے قتل کردے گا۔ نوجوان نے کانسٹیبل کی خواہش پوری کرنے سے انکار کیا تو وہ طیش میں آگیا اور نوجوان کو اس کے والد اور بھائی کے سامنے ہی گولی مار کر قتل کردیا۔ڈی پی او قصور کے مطابق تھانہ کھڈیاں کے علاقے میں نوجوان کے قتل میں ملوث ملزم اہلکار کو ایک گھنٹے کے انتہائی قلیل وقت میں گرفتار کرلیا گیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ نوجوان حافظ سمیع الرحمان کے قتل کا واقعہ انتہائی افسوسناک ہے ، پولیس کی طرف سے انصاف کے تمام تقاضوں کو پورا کیا جائے گا اور ملزم کو قرار واقعی سزا دلوائی جائے گی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے